1917 کی بات ہے عراق میں برطانوی جنرل سٹانلی ماودے کا ایک چرواہے سے سامنا ہوا.
جنرل نے اپنے مترجم سے کہا ان سے کہہ دو کہ جنرل تمہیں ایک پاونڈ دے گا بدلے میں تمہیں اپنے کتے کو ذبح کرنا ہوگا.
کتا چرواہے کے لئے بہت اہم ہوتا ہے یہ اس کی بکریاں چراتا ہے،دور گئے ریوڑ کو واپس...
👇 1/5
.... لاتا ہے،درندوں کے حملوں سے ریوڑ کی حفاظت کرتا ہے،لیکن پاونڈ کی مالیت تو آدھا ریوڑ سے بھی زیادہ بنتی ہے، چرواہے نے کتا لایا اور ذبح کر دیا.

جنرل نے کہا اگر تم اس کی کھال بھی اتار دو میں تمہیں ایک اور پاونڈ دینے کو تیار ہوں،چرواہے نے خوشی خوشی کتے کی کھال بھی اتار دی.
👇2/5
جنرل نے کہا میں مزید ایک اور پاونڈ دینے کے لئے تیار ہوں اگر تم اس کی بوٹیاں بھی بنا دو چرواہے نے فوری یہ آفر بھی قبول کرلی جنرل چرواہے کو تین پاونڈ دے کر چلتا بنا.

جنرل چند قدم آگے گیا تھا کہ اسے چرواہے نے کہا اگر میں کتے کا گوشت کھا لوں تو آپ مجھے ایک اور پاونڈ دیں گے؟👇
3/5
جنرل نے انکار کیا کہ میں صرف تمہاری نفسیات اور اوقات دیکھنا چاہتا تھا...

جنرل نے اپنے ساتھیوں سے کہا اس قوم کے لوگوںسے تمہیں خوفزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے.

آج یہی حال مسلم ملکوں کا ہے،اپنی چھوٹی سی مصلحت اور ضرورت کے لئے اپنی سب سے قیمتی اور اہم چیز کا سودا کر دیتے ہیں.👇
4/5
آج ہمارے درمیان ہمارے ملک میں کتنے ہی ایسے 'چرواہے' ہیں جو نہ صرف کتے کا گوشت کھانے کے لئے تیار ہیں بلکہ اپنے ہم وطن بھائیوں کا گوشت کھا رہے ہیں اور چند ٹکوں کے عوض اپنا وطن بیچ رہے ہیں.
5/5
ڈاکٹر علی الوردی کی عربی کتاب "لمحات اجتماعية من تاريخ العراق" سے ماخوذ

#ZafarDar

• • •

Missing some Tweet in this thread? You can try to force a refresh
 

Keep Current with Zafar M. Dar

Zafar M. Dar Profile picture

Stay in touch and get notified when new unrolls are available from this author!

Read all threads

This Thread may be Removed Anytime!

PDF

Twitter may remove this content at anytime! Save it as PDF for later use!

Try unrolling a thread yourself!

how to unroll video
  1. Follow @ThreadReaderApp to mention us!

  2. From a Twitter thread mention us with a keyword "unroll"
@threadreaderapp unroll

Practice here first or read more on our help page!

More from @ZafarDar

10 Jan
گوادر پورٹ سی پیک کو تباہ کرنے کا ہر حربہ کامیابی کی طرف گامزن تھا. پاکستان کو کُھلی جنگ کی طرف لانے کے لیئے انڈیا کے پاس ایک ہی ہتھیار تھا... کشمیر..
کشمیر پر 370 لگانے کے بعد دشمن تیاری میں تھے کہ جیسے ہی پاکستان کُھلی جنگ کی طرف آئےتو اسے3 اطراف سے مارا جائے.
1/10👇
#ZafarDar
لیکن وہ بھول چُکے تھے کہ ایک اور قوت اُن پر نظر رکھے ہوئے ہے جسے مارخور کہتے ہیں..
کچھ ہی عرصے بعد جب جموں کشمیر میں 370 لگایا گیا تو پاکستان کی عوام کو سڑکوں پر لایا جانے لگا. پاکستان اس وقت اندرونی دشمنوں سے لڑنے اور اُن کو پہچاننے میں مصروف تھا. 👇
2/10
ایک طرف کشمیر کی آڑ میں پاکستان کو کُھلی جنگ کی طرف لانے والے مصروفِ عمل تھے. تو دوسری طرف پاک آرمی کے خلاف نعرے لگانے والے اور پاکستانی عوام کو پاک فوج کا دشمن بنانے والے مصروفِ عمل تھے..
ایسے میں موجودہ وزیراعظم کے پاس ایک ہی راستہ تھا. قریبی دوستوں سے مشورہ کیا جائے۔۔
👇3/10
Read 10 tweets
5 Dec 20
یہ معلومات ہر شہری کے لیے جاننا ضروری ہے۔
مختلف دفعات کی تفصیل:
دفعہ 307 = قتل کی کوشش
302 = قتل
376 = عصمت دری
395 = ڈکیتی
377 = غیر فطری حرکتیں
396 = ڈکیتی کے دوران قتل
120= سازش
365= اغوا
201 = ثبوت کا خاتمہ
309 = خودکش کی کوشش
310= دھوکہ دہی
1/8👇

#ZafarDar
312 = اسقاط حمل
351 = حملہ کرنا
362= اغوا
320 = بغیر لائسنس ایکسڈنٹ میں کسی کی موت ہونا(ناقابلِ ضمانت)
322 = ڈرائیونگ لائسنس کے ساتھ ایکسیڈنٹ میں کسی کی موت ہونا (قابلِ ضمانت)
445 = گھریلو امتیاز
494 = شریک حیات کی زندگی میں دوبارہ شادی کرنا
499= ہتک عزت
2/8👇
قانون کے کچھ حقائق
1۔ ضابطہ فوجداری کے تحت، دفعہ 46، شام 6 بجے کے بعد اور صبح 6 بجے سے قبل پولیس کسی بھی خاتون کو گرفتار نہیں کرسکتی، چاہے اس سے کتنا بھی سنگین جرم ہو۔ اگر پولیس ایسا کرے تو پولیس افسر کے خلاف مقدمہ درج کیا جاسکتا ہے۔اس سے افسر کی نوکری خطرے میں پڑسکتی ہے۔
3/8👇
Read 8 tweets
2 Dec 20
ایک انٹرویو میں اناؤنسر نے اپنے مہمان سےجو ایک کروڑ پتی شخص تھا ، پوچھا :زندگی میں سب سے زیادہ خوشی آپ کو کس چیز میں محسوس ہوئی؟
وہ بولا: میں زندگی میں خوشیوں کے چار مراحل سے گزرا اور آخر میں مجھے حقیقی خوشی کا مطلب سمجھ آیا۔
پہلا مرحلہ مال اور اسباب جمع کرنے کا تھا۔۔👇
1/5
۔۔اس مرحلے میں مجھے وہ خوشی نہیں ملی جو مجھے مطلوب تھی. دوسرا مرحلہ قیمتی سامان اور اشیاء جمع کرنے کا. لیکن مجھے محسوس ہوا کہ اس کا اثر بھی وقتی ہے اور قیمتی چیزوں کی چمک بھی زیادہ دیر تک برقرار نہیں رہتی.
تیسرا مرحلہ بڑے پروجیکٹ حاصل کرنے کا. جیسے فٹ بال ٹیم خریدنا۔۔👇2/5
۔۔. لیکن یہاں بھی مجھے وہ خوشی نہیں ملی جس کا میں تصور کرتا تھا.
ایک مرتبہ میں ایک دوست کے کہنے پرکچھ معذور بچوں کے لیے وہیل چیرز خرید کر دینے گیا۔وہاں میں نےان کے چہروں پر خوشی کی عجیب چمک دیکھی. وہ سب کرسیوں پر بیٹھ کر خوش ہوئے اور جی بھر کے مزہ کر رہے تھے۔۔۔👇3/5
Read 5 tweets
22 Nov 20
اسےضرور پڑھیں۔۔

2014 میں بحرین نے پاکستان کو نرسنگ یونیورسٹی گفٹ کرنے کا اعلان کیا۔ پاکستان کو اس پراجیکٹ کیلئے صرف زمین فراہم کرنا تھی جبکہ تعمیراتی لاگت کا تمام خرچ بحرین کی حکومت نے اٹھانا تھا۔
اس وقت کے وزیراعظم نوازشریف نے یہ آفر بے دلی سے سرخ فیتے میں لپیٹ کر رکھ دی۔👇1
2016 میں بحیرین کی حکومت نے پوچھا کہ کیا آپ منصوبہ شروع کرنے کیلئے تیار ہیں تو وزارت صحت کے کلرک نے جواب لکھا کہ ہمارے پاس اس منصوبے کیلئے فی الحال زمین موجود نہیں۔
یاد رہے اس وقت رائیونڈ پیلس کے اطراف پانچ سو ایکڑ سے زائد زمین قبضے میں لے کر آمدورفت کیلئے بند کردیا گیا تھا۔
👇2
پھر 2017 میں دوبارہ رابطہ کرنے پر شاہد خاقان عباسی نے جواب دیا کہ ابھی تک زمین کی تلاش جاری ہے۔
پچھلے سال تحریک انصاف کی حکومت نے اس معاملے پر پیشقدمی کرتے ہوئے چک شہزاد میں 237 کنال زمین وزارت صحت کو الاٹ کرکے منصوبے پر کام شروع کرنے کا فیصلہ کیا۔
👇3
Read 6 tweets
20 Nov 20
مودی نے آرٹیکل 370 کا خاتمہ کس پاکستانی لیڈر کی فرمائش پر کیا؟

مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت آرٹیکل 370 کے خاتمے کے ساتھ ہی ختم ہوگئی مگر ایسا اچانک کیا ہوا تھا جو مودی نے یہ قدم اُٹھایا اور کشمیر کی خصوصی حیثیت کیونکر ختم کی اور کس کی فرمائش پر ایسا کیا ۔۔۔1👇
۔۔۔اس بات کی خبر ہمارے وزیراعظم بیشتر وزراء اور خفیہ ایجنسیوں کو بہت پہلے سے ہے کہ آرٹیکل 370 ختم کرانے میں کن کن پاکستانی شخصیات نے نریندر مودی کا ساتھ دیا اور اسکا مقصد کیا تھا۔
اپریل 2019 میں قطر میں انڈین سفیر پیوش سریوستو سے سابق سینٹر سیف الرحمن۔۔۔👇2
۔۔۔ نے نواز شریف کا ایک خاص پیغام انڈین سفیر کے ذریعے نریندر مودی تک پہنچایا۔

اس پلان کے تحت دوسری میٹینگ لندن میں ہوئی جس میں برطانیہ میں تعینات انڈین سفیر رُچی گھنشام انڈین وزیرِداخلہ امیت شاہ، اسحاق ڈار، حسین نواز اور سینیٹر سیف الرحمن قطر سے شامل ہوئے۔۔۔👇3
Read 17 tweets
3 Oct 20
السلام علیکم
میدان عرفات میں نبی رحمت محمد رسول اللہﷺ نے 9 ذی الجہ، 10 ہجری (7 مارچ 632 عیسوی) کو آخری خطبہ حج دیا تھا۔ آئیے اس خطبے کے اہم نکات کو دہرا لیں، کیونکہ ہمارے نبی نے کہا تھا، میری ان باتوں کو دوسروں تک پہنچائیں۔ حضرت محمد رسول اللہ ﷺ نے فرمایا۔۔
👇
#ZafarDar
اے لوگو! سنو، مجھے نہیں لگتا کہ اگلے سال میں تمہارے درمیان موجود ہوں گا۔ میری باتوں کو غور سے سنو، اور ان لوگوں تک پہنچاؤ جو یہاں نہیں پہنچ سکے۔

جس طرح یہ دن، مہینہ اور یہ جگہ حرمت والے ہیں۔ بالکل اسی طرح دوسرے مسلمانوں کی زندگی، عزت اور مال حرمت والے ہیں۔
👇
لوگوں کے مال اور امانتیں ان کو واپس کرو،

کسی کو تنگ نہ کرو، کسی کا نقصان نہ کرو۔ تا کہ تم بھی محفوظ رہو۔

یاد رکھو، تم نے اللہ سے ملنا ہے، اور اللہ تم سے تمہارے اعمال کی بابت سوال کرے گا۔

اللہ نے سود کو ختم کر دیا، اس لیے آج سے سارا سود ختم کر دو (معاف کر دو)۔
👇
Read 8 tweets

Did Thread Reader help you today?

Support us! We are indie developers!


This site is made by just two indie developers on a laptop doing marketing, support and development! Read more about the story.

Become a Premium Member ($3/month or $30/year) and get exclusive features!

Become Premium

Too expensive? Make a small donation by buying us coffee ($5) or help with server cost ($10)

Donate via Paypal Become our Patreon

Thank you for your support!

Follow Us on Twitter!