آج ہم آپ کوچیونٹیوں کے بارے میں کچھ حقائق کے بارے میں بتائیں گے جو شاید پہلے آپ نا جانتے ہوں ۔
چیونٹیوں سے متعلق سورۃ نمل کی آیت نمبر 17 اور 18میں اللہ کا ارشاد ہے کہ:
‘اور سلیمانؑ نکلے اپنے پورے لشکر کو لے کر جس میں انسان،جن اورتمام جانورتھے،فوج
بندی کیے ہوئے جانے لگے۔یہاں تک کہ وہ گزرے وادی نمل سے،جو چیونٹیوں کی وادی تھی،ایک چیونٹی نے دوسری چیونٹی سے کہا اے چیونٹیوں اپنے گھروں میں گھس جاؤ،کہیں تمہیں سلیمان اور اس کی فوجیں نہ پیس ڈالیں ،اور انہیں خبر بھی نہ ہو،اور سلیمان ؑ نے جب اس چیونٹی کی
بات سنی تو مسکرائے اوراپنے لشکر کا رخ موڑ لیا۔’
چیونٹیاں حضرت سلیمان ؑ سے بات کرتی تھیں اور اللہ نے سلیمانؑ کو ان کی بات سمجھنے کی صلاحیت بھی دی تھی۔جو بات قرآن نے چودہ سو سال پہلے بتائی،آج کی جدید سائنس مختلف تجربات کرنے کے
بعد اس نتیجے پر پہنچی ہے کہ چیونٹیاں ایک زبردست معاشی سسٹم میں رہتی ہیں اور اتنے مشکل سسٹم سے بات کرتی ہیں کہ عقل دنگ رہ جاتی ہے۔
سائنس نے بتایا کہ چیونٹیاں آواز سے بات نہیں کرتیں بلکہ ڈیٹا منتقل کر کے بات کرتی ہیں اور ان کاطریقہ یہ ہوتا ہےکہ وہ
اپنے منہ سے ایک مواد نکالتی ہیں اور سامنے والی چیونٹی کے منہ پر چپکا دیتی ہیں۔دوسری چیونٹی اس سے سارا پیغام ڈی کوڈ کر کے سمجھ لیتی ہے۔اس لئے آپ نے اکثردیکھا ہوگا کہ چیونٹیاں چلتے چلتے رک کر دوسری چیونٹی کے منہ سے منہ لگا کرآگے چلی جاتی ہیں،یہ وہ عمل ہوتا ہے
جس میں وہ ڈیٹا منتقل کرتی ہیں ۔
جدید تحقیق میں یہ بات ثابت ہوچکی ہے کہ چیونٹیاں آپس میں نہ صرف بات کرتی ہیں بلکہ ایک زبردست نظام کے تحت زندگی بھی گزارتی ہیں۔
آپ نے اکثر دیکھا ہوگا کہ بارش سے پہلے چیونٹیاں اپنے گھر کے باہرگول چکر لگانا
شروع کر دیتی ہیں اور مٹی کے پہاڑ بنا لیتی ہیں،تاکہ بارش کا پانی ان کے گھر میں نہ آسکے۔انہیں وقت سے پہلے بارش کا اس لئے اندازہ ہوجاتا ہے کہ ان میں قدرتی طور پر سنسر موجود ہوتا ہےجسےہائیڈروفولک کہتے ہیں۔جب ہوا میں نمی کا تناسب زیادہ ہوجاتا ہےتو چیونٹیوں میں موجود یہ
سنسر اسے محسوس کرتا ہےاور چیونٹیوں کے دماغ کو بارش کے متعلق پیغام پہنچاتا ہے۔اس لئے چیونٹیاں بارش سے پہلے ہی اپنے کھانے پینے اور رہنے کا انتظام لر لیتی ہیں۔
محکمہ موسمیات بھی اسی عمل کو دھراتے ہوئےہوا میں نمی کا تناسب نوٹ کرتے ہیں
اور پھر بتاتے ہیں کہ بارش کے کیا امکانات ہیں۔تاریخ گواہ ہے کہ جنہوں نے قرآن میں کیا ان لوگوں نےدرختوں کے نیچےبیٹھ کرنہ صرف زمین کا حجم بتایا بلکہ یہ بھی بتایا کہ انسان پرندوں کی مانند کیسے پرواز کر سکتا ہے۔
اگر ہم قرآن میں غورفکر کریں تو ایسی
ایجادات کر سکتے ہیں کہ نسل انسانی حیران رہ جائے۔اللہ تعالیٰ نے قرآن میں ارشاد فرمایا ہے کہ’ اس میں عقل والوں کے لئے بہت سی نشانیاں ہیں۔

مختصر معلوماتی اسلامی اور تاریخی اردو تحریریں پڑھنے کیلئے فیسبک گروپ جوائن کریں 👇👇👇

facebook.com/groups/7591466…

• • •

Missing some Tweet in this thread? You can try to force a refresh
 

Keep Current with علـــمـــی دنیــــــا

علـــمـــی دنیــــــا Profile picture

Stay in touch and get notified when new unrolls are available from this author!

Read all threads

This Thread may be Removed Anytime!

PDF

Twitter may remove this content at anytime! Save it as PDF for later use!

Try unrolling a thread yourself!

how to unroll video
  1. Follow @ThreadReaderApp to mention us!

  2. From a Twitter thread mention us with a keyword "unroll"
@threadreaderapp unroll

Practice here first or read more on our help page!

More from @Pyara_PAK

23 Sep
سلطنت عثمانیہ کے وفادار عجمی پاشا السعدونی

جسے برطانوی استعمار نے ملتِ اسلامیہ سے غداری کے بدلے تین_لاکھ_پاؤنڈ جو آج کی قیمت میں تقریباً ۸۸ ملین پاؤنڈز بنتے ہیں کی پیشکش کی, جو عجمی پاشا نے یکسر ٹھکرا دئیے, حالانکہ رشوت کی پیش کش کرنے والا برطانوی Image
جاسوس_پرسی_کاکس تھا جو #آلِ_سعود, #غدار_شریف_حسین اور تمام عرب شیخوں کے ساتھ بیٹھا تھا سوائے اس ہیرو کے جس نے فخر سے انکار کیا.

جب نوآبادیاتی ممالک کے لشکر اپنی طاقت ور فوجوں جاسوسوں اور مقامی ایجنٹوں کے ساتھ آگے بڑھے اور ملتِ اسلامیہ کو دو
حصوں میں تقسیم کیا تو شیخ عجمی پاشا السعدون عرب اشرافیہ کی سربراہی میں ملتِ اسلامیہ کی جو محبت کی ان کی رگوں میں دوڑ رہی تھی اس کی خاطر برطانوی استعمار کے سامنے کھڑے ہو گئے.

اس کے علاوہ مشہور برطانوی ایجنٹ #تھامس_ایڈورڈ_لارنس المعروف لارنس آف
Read 12 tweets
22 Sep
سلطان صلاح الدین ایوبی کی پیدائش اور ان کے والدین

گورنر نجم الدین ایوب کافی عمر ھونے تک شادی سے انکار کرتا رھا،
ایک دن اس کے بھائی اسدالدین شیر کوہ نے اس سے کہا : بھائی تم شادی کیوں نھیں کرتے ..؟
نجم الدین نے جواب دیا :
میں کسی کو اپنے قابل نھیں سمجھتا. Image
اسدالدین نے کہا :
میں آپ کیلئے رشتہ مانگوں ؟
نجم الدین نے کہا :
کس کا ؟
اسدالدین :
ملک شاہ بنت سلطان محمد بن ملک شاہ سلجوقی کی بیٹی کا یا وزیر المک کی بیٹی کا..؟
نجم الدین ؛
وہ میرے لائق نھیں ،
اسدالدین حیرانگی سے :
پھر کون تیرے لائق ھوگی ؟
نجم الدین نے جواب دیا :
مجھے ایسی نیک بیوی چاھئیے جو میرا ھاتھ پکڑ کر مجھے جنت میں لے جائے اور اس سے میرا اک ایسا بیٹا پیدا ھو جس کی وہ بہترین تربیت کرے جو شہسوار ھو اور مسلمانوں کا قبلہ اول واپس لے ..
Read 9 tweets
22 Sep
ذرا مغرب کی انسان دوستی کا ایک کرشمہ دیکھیے۔

امریکہ میں جارج سٹِنی نامی یہ بچہ، کم عمر ترین فرد ہے جس کو سزائے موت دی گئی تھی. اس کی عمر صرف 14 برس تھی اور اس کو برقی کرسی کے ساتھ باندھ کر بجلی کے جھٹکے دے دے کر مارا گیا تھا, Image
جارج پر الزام تھا کہ اس نے دو سفید فارم لڑکیوں کو قتل کیا ہے ان میں سے ایک بچی کا نام "بَیٹی" تھا جس کی عمر 11 برس تھی دوسری بچی کا نام "مَیری" تھا جس کی عمر 7 برس تھی۔جارج پر ان کے قتل کا الزام اس لیے لگا کہ ان بچیوں کی لاشیں اس کے گھر کے پاس سے ملی تھیں۔
کیس کی تفتیش کے دوران یہ بچہ اپنے ہاتھ میں بائبل لے کر آیا اور اس پر ہاتھ رکھ کر قسم کھا کر بولا کہ میں معصوم ہوں یہ قتل میں نے نہیں کیے ہیں اس وقت عدالت کے تمام وکلاء سفید فام تھے, کسی وکیل نے جارج کا کیس نہیں لیا کیونکہ وہ سیاہ فارم تھا اسی طرح عدالت کا جج
Read 9 tweets
20 Sep
شاہوں سیدوں اور سجادہ نشینوں کی غداری اور رائے احمد خان کھرل کا قتل

جون 1857 کو ملتان چھاونی میں پلاٹون نمبردس کو بغاوت کے شبہے میں نہتا کیا گیا اور پلاٹون کمانڈر کو بمعہ دس سپاہیوں کے توپ کے آگے رکھ کر اڑا دیا گئے آخر جون میں بقیہ نہتی پلاٹون کو شبہ ہوا کہ
انہیں چھوٹی چھوٹی ٹولیوں میں فارغ کر دیا جائے گا اور انہیں تھوڑا تھوڑا کرکے تہہ تیغ کیا جائے گا سپاہیوں نے بغاوت کر دی تقریبا بارہ سوسپاہیوں نے بغاوت کا علم بلند کیاانگریزوں کے خلاف بغاوت کرنے والے مجاہدین کو شہر اور چھاونی کے درمیان واقع پل شوالہ پر دربار بہاءالدین
زکریا کے سجادہ نشین مخدوم شاہ محمود قریشی نے انگریزی فوج کی قیادت میں اپنے مریدوں کے ہمراہ گھیرے میں لے لیااور تین سو کے لگ بھگ نہتے مجاہدین کو شہید کر دیا۔یہ مخدوم شاہ محمود قریشی ہمارے موجودہ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کے لکڑدادا تھے اور ان کا نام
Read 17 tweets
20 Sep
مرد کا درجہ عورت سے زیادہ کیوں؟

2006 نومبر حج میں نام نکلا تھا فلائیٹ بھی پہلی تھی کھاریاں سے بہاولپور کی پوسٹنگ ہوئی تھی ۔
دو کمروں کا فلیٹ الاٹ ہوا تھا دو تین دن میں جلدی جلدی سامان شفٹ کیا بچوں کو پیچھے چالیس دن چھوڑنا تھا سو ان کی
ساری سیٹنگ کی اور بچوں کو ساتھ لیا اور بائے روڈ کراچی کیلیے نکل پڑے ۔ راستے میں رات اور شدید بارش ہونے لگی ۔ ساتھ ہی ٹائر پنکچر ہوگیا ۔ رات کا سناٹا ، نومبر کی سرد رات ( جو کبھی نہیں بھولتی ) جس کی شدت میں تیز بارش نے خوب اضافہ کردیا تھا ۔۔۔
صاحب نے گاڑی اک سائیڈ پر روکی اور خود باہر نکلے ٹائر بدلنے لگے ۔۔ سات سالہ ارسل بھی بابا کے ساتھ اترا اور اترتے ہوئے بولا ۔۔۔ مما اچھی طرح دروازہ بند کرلیں آپ لوگ بھیگ نہ جائیں ۔۔ اور پھر برستی بارش میں ٹارچ تھامے کھڑا تھا ۔ آپی چھوٹو اور مما گاڑی کے اندر گرم ہیٹر آن
Read 9 tweets
19 Sep
سات سو سال تک زندہ رہنے والے ہندوستانی صحابی رسولؐﷺ

رسولؐﷺ اللّٰهﷻ کے ایک صحابی بھارت کے ایک شہر بھٹنڈہ میں آسودۂ خاک ہیں، ان کی وہاں موجودگی سےآج بھی لوگ فیض حاصل کررہے ہیں
بھارتی شہربھٹنڈہ سے تعلق رکھنے والے بابا Image
رتن ہندی کا نام رتن ناتھ ابن نصر ہے اورروایت کے مطابق وہ ایک تاجر تھے ، جو کہ عرب ممالک میں اپنے مال کی فروخت کے لیے جایا کرتے تھے _____!!!

روایت ہے کہ رتن ہندی اپنی جوانی میں عرب کا سفر کررہے تھے کہ ایک خوبصورت کمسن چرواہے کو ، جس کی عمر سات سال
کے لگ بھگ تھی ، انہوں نے مشکل میں دیکھا۔ انہوں نے آگے بڑھ کر اس کی مدد کی تو اس حسین نقوش کے حامل بچے نے حیرت انگیز طور پر انہیں سات بار دعا دی کہ ’اللہ تمہیں طویل عمر عطا کرے‘____!!!

رتن اس کے بعد واپس ہند لوٹ آئے اور اپنے کاروبارِ حیات میں مشغول ہوگئے ،لگ بھگ
Read 12 tweets

Did Thread Reader help you today?

Support us! We are indie developers!


This site is made by just two indie developers on a laptop doing marketing, support and development! Read more about the story.

Become a Premium Member ($3/month or $30/year) and get exclusive features!

Become Premium

Too expensive? Make a small donation by buying us coffee ($5) or help with server cost ($10)

Donate via Paypal Become our Patreon

Thank you for your support!

Follow Us on Twitter!