Kaşaf Noor Profile picture
13 Sep, 18 tweets, 8 min read
موٹر وے زیادتی کیس یقیناً ایک اندوہناک واقعہ ہے
لیکن ن لیگ کا اس واقعے پر سیاست کرنا سمجھ سے بالاتر ہے
اگر پچھلے سالوں کی خبروں کا مطالعہ کیا جائے تو ن لیگ کے اراکین اسمبلی "ریپ کیسز،ہراسمنٹ اور قتل" کی وارداتوں میں سب سے زیادہ ملوث ہیں
دیکھیے تھریڈ میں!
ترتیب سے جائزہ لیتے ہیں
2019: پی ایم ایل این ایم پی اے "طاہر جمیل پر 14 سال کی گھریلو ملازمہ سے زیادتی کرنے پر ایف آئی ار درج ہوئ تھی۔
کیس بلا پر ملزم تاحال آزاد ہیں!
اگست 2019: ن لیگی ایم پی اے عطاء الرحمٰن پر 21 سالہ طالبہ نے مبینہ زیادتی اور بلیک میلنگ کا الزام لگایا۔ لڑکی نے ایف آئی آر درج کرانے کی کوشش کی پر منہ بند کروادیا گیا
خبر ہے کہ عطا الرحمن آج کل ملک سے فرار ہے!
16 اگست 2018: کی خبر ہے سابق نون لیگی ایم پی اے شاکر بشیر اعوان کی سکول ٹیچر سے مبینہ زیادتی کا معاملہ سامنے آیا ۔
ان پر مقدمہ درج ہوا ،کیس چلا نتیجہ صفر!!
28 نومبر 2018: ن لیگی ورکر سامعیہ چودھری کی لاش " چنبہ ہاؤس" ن لیگی ایم این اے چودھری اشرف کے فلیٹ سے برآمد ہوئ
شوہر نے الزام لگایا کہ سامعیہ کو زیادتی کے بعد قتل کیا گیا ہے
ایف آئی آر ہوئ ، ایم این اے کے خلاف تفتیش ہوئ
نتیجہ یہ نکلا کہ 8 جنوری 2017 کو کیس بند کردیا گیا!
2016: ن لیگ پنجاب یوتھ ونگ کے سیکرٹری عدنان ثنا اللہ پر لڑکی نے مبینہ زیادتی کا الزام لگایا۔ تحقیقات ہوئیں ، کیس چلا پر ملزمان تاحال قانون کی گرفت سے آزاد!!
8 اگست 2015: ن لیگ کے ایم پی اے ملک سعید بچوں سے زیادتی کیس میں نامزد ہوئے۔
ملزمان نے اسر و رسوخ استعمال کرتے ہوئے ایف آئی آر تک درج نہ ہو نے دی!
19 مارچ 2015 : ن لیگی ایم پی اے نے ساتھی کے ساتھ مل کر اس خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنایا جو اس سے ملازمت مانگنے آئیے تھی
کتنی حوس ہے آپ خود اندازہ لگائیے!
2015:ن لیگی ایم پی اے کی ساتھیوں سمیت حاملہ خاتون سے زیادتی
ملزمان تاحال ازاد گھوم رہے!!
2014:مسلم لیگ کے رہنما کا بیٹوں کے ہمراہ خاتون کا گینگ ریپ
ملزمان میاں صاحب کے ساتھ واضح نظر آرہے ہیں
لیکن آزاد!!
2013:وہی ملزمان جنھوں نے موٹر وے پر عورت سے زیاتی کی پہلے بھی جرائم کرتے رہے
اگر خادم اعلیٰ کی مثالی پولیس اس وقت ملزمان کا گھیراؤ کرلیتی تو آج کسی اور عورت کی زندگی برباد نہ ہوتی!!
2012:ن لیگی رہنما کا آٹھویں جماعت کی طالبہ سے زیادتی، پولیس نے مظلوموں کی فریاد تک نہ سنی!!
2011:اس وقت کے ن لیگی ایم این اے اور آج کے محترم تجزیہ کار ایاز میر صاحب پر 15 سال کی لڑکی سے زیادتی کا الزام لگا
ایاز میر صاحب آج سینئر تجزیہ کار بن کر حکومت وقت کو کوس رہے ہیں!!
2009:ن لیگی ایم پی اور وزیراعلی پنجاب کے معاون خصوصی منور احمد گل کا 35 سالہ خاتون سے مبینہ ریپ!!
صرف ن لیگ ہی نہی پی پی رہنماؤں پر بھی کچھ اس قسم کے الزامات ہیں
سنتھیا رچی نے پی پی سینیٹر اور سابق وزیر خارجہ پر مبینہ زیادتی کا الزام لگایا
لیکن حالات یہ ہیں کہ سنتھیا عدالتوں کے چکر لگارہی جب کی رحمان ملک آزاد ہے!!
@CynthiaDRitchie
آپ خود اندازہ لگائیے،جس ملک کے معزز ایوانوں میں بیٹھے عوامی نمائندوں کے یہ کارنامے ہوں وہاں پر عام عوام کیسے ان جرائم سے خود کو روک پائے گی۔
امید ہے حکومت وقت ان تمام کیسز کو منطقی انجام تک پہنچائے گی ورنہ معاشرے سے یہ برائیاں کبھی ختم نہیں ہوں گی!
28 نوبر 2016
یہ محض چند واقعات ہیں،جن کو میں نے تھریڈ میں لکھا ہے
ن لیگ کی تاریخ اس قسم کے واقعات سے بھری پڑی ہے!

• • •

Missing some Tweet in this thread? You can try to force a refresh
 

Keep Current with Kaşaf Noor

Kaşaf Noor Profile picture

Stay in touch and get notified when new unrolls are available from this author!

Read all threads

This Thread may be Removed Anytime!

PDF

Twitter may remove this content at anytime! Save it as PDF for later use!

Try unrolling a thread yourself!

how to unroll video
  1. Follow @ThreadReaderApp to mention us!

  2. From a Twitter thread mention us with a keyword "unroll"
@threadreaderapp unroll

Practice here first or read more on our help page!

Did Thread Reader help you today?

Support us! We are indie developers!


This site is made by just two indie developers on a laptop doing marketing, support and development! Read more about the story.

Become a Premium Member ($3/month or $30/year) and get exclusive features!

Become Premium

Too expensive? Make a small donation by buying us coffee ($5) or help with server cost ($10)

Donate via Paypal Become our Patreon

Thank you for your support!

Follow Us on Twitter!