ایف آئی اے سائبر کرائم سرکل کا بڑا ایکشن

کراچی سے آپریٹ ہونے والے بین الاقوامی پورن ویب سائیٹ SteamKer App کا بڑا گروہ پکڑا گیا

کراچی میں ورچوئل کرنسی کے نام پر خواتین کو غیر اخلاقی کاموں میں استعمال کئے جانے کا انکشاف
خواتین کو ایپلیکیشن کے زریعے بین الاقوامی کلائنٹس سے ملوایا جاتا۔

غیر اخلاقی ویڈیو کالنگ خواتین کع کرنسی کے نام پر ڈائمنڈ دیے جاتے۔

خواتین جتنے زیادہ ڈائمنڈ حاصل کرتی اتنی زیادہ انہیں تنخواہ دی جاتی

کچھ لڑکیوں سے ابتدائی طور پر یہ کام کرانے
کے بعد ان سے زبردستی غیر اخلاقی کام بھی کر آئے

یہ گروپ کی صورت میں کام کرنے والا نیٹ ورک ہے

یہ ایپلیکیشن رمشا نامی خاتون کی ملکیت ہے جس میں فضل قادر نامی شخص اس کا پارٹنر ہے

خواتین کو بھرتی کرنے کے لیے یہ گروپ باقاعدہ طور پر اخبار میں اشتہارات بھی دیتا
تھا، جس میں چالیس ہزار تک تنخواہ کا جھانسہ دیا جاتا تھا۔

خواتین کو گھر بیٹھے پارٹ ٹائم میں جاب کرنے کی آفر کی جاتی تھی

اس گروپ کے 35 سے زائد ممبر پاکستان بھر میں کام کر رہے ہیں

ہر چار لاکھ ڈائمنڈ حاصل کرنے پر پاکستانی 7000روپے خواتین کو دیے جاتے
متاثرہ خاتون کی نشاندہی پر ایف آئی اے سائبر کرائم سرکل کا گلشن اقبال کے علاقے میں فلیٹ پر چھاپہ

مرکزی ملزم فضل قادر گرفتار

دفتر سے نو موبائل فون کمپیوٹر اور دیگر الیکٹرانک ڈیوائس تحویل میں لے لی گئی

برآمد ہونے والے الیکٹرانک ڈیوائس سے غیر
اخلاقی ویڈیوز اور لڑکیوں کا ڈیٹا ملا ہے

اسٹریم کر ایپلیکیشن کی مالک رمشا سمیت تین افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے

ایڈیشنل ڈائریکٹر سائبر کرائم سرکل

فیض اللہ کوریجو
@RajaFaisal01 @Intl_Mediatior @Jinnah_Club 👀

• • •

Missing some Tweet in this thread? You can try to force a refresh
 

Keep Current with Ghulam Mohiuddin

Ghulam Mohiuddin Profile picture

Stay in touch and get notified when new unrolls are available from this author!

Read all threads

This Thread may be Removed Anytime!

PDF

Twitter may remove this content at anytime! Save it as PDF for later use!

Try unrolling a thread yourself!

how to unroll video
  1. Follow @ThreadReaderApp to mention us!

  2. From a Twitter thread mention us with a keyword "unroll"
@threadreaderapp unroll

Practice here first or read more on our help page!

More from @rising_gmd_2171

18 Oct
آ پ کا تھوڑا سا قیمتی وقت درکار ہے۔
چکوال سے کوئی 40 کلومیٹر شمال مشرق کی طرف جائیں، تو ایک چھوٹا سا خاموش گاؤں آتا ہے، جس کا نام جند اعوان ہے۔ بہت کم لوگوں کو پتا ہے کہ اس گاؤں کے قبرستان میں ایک ایسی قبر ہے، جس میں لیٹے انسان نے تن تنہا پاکستان کا پرچم بین الاقوامی
سطح پر، ایک بار نہیں بار بار بلند کیا۔ عبد الخالق کو بچپن ہی سے بھاگنے کا جنون تھا۔ ایک بار پاکستان آرمی کے برگیڈیر رودھم نے اس کی کبڈی اور ریس کا مقابلہ دیکھا، تو اسے آرمی میں جوانوں کی ٹریننگ پر آمادہ کیا۔ یہ کام اس نے آخر دم تک بخوبی نبھایا
اور بے شمار مایہ ناز اتھلیٹ پاک آرمی کو دیے۔ وہ پاک آرمی میں صوبیدار خالق کے نام سے مشہور تھا۔

اس اکیلے اتھلیٹ نے نیشنل گیمز میں 100 سونے کے تمغے اور انٹرنیشنل مقابلوں میں 26 گولڈ، 16 سلور اور بے شمار برونز میڈل جیتے۔ 1954ء منیلا ایشین گیمز میں نا صرف گولڈ
Read 19 tweets
17 Oct
*فوج اچھی اور جرنیل برے ہیں؟؟؟🤔🤔🤔
*پراپگینڈا مہم میں بطور خاص پاک فوج کے جرنیلوں اور سپاہ سالاروں کو نشانہ بنایا جاتا ہے۔*
کسی فوج میں سپاہیوں کو یہ یقین دلا دو کہ جس جرنیل کے حکم پر تم جانیں دے رہے ہو وہی ریاست کے ساتھ مخلص نہیں ہے۔ پھر دیکھو کہ وہ فوج کیسے لڑتی ہے۔ اس کے
علاوہ ایک اور تجربہ کرو۔ آپ پاک فوج کو برا کہہ کر دیکھیں۔ اکثر لوگ آپ کی مخالفت کرینگے۔لیکن آپ جرنیل کو گالی دیں۔ تو کم لوگ مخالفت کرینگے اور مقصد بھی حاصل ہوجائیگا.سپاہ سالار کو مار کر جنگیں جیتنا ہزاروں سال سے آزمودہ ہے اور آج بھی اتنا ہی
موثر۔ تب آج کی پراپیگینڈا وار میں بھلا اس کو کیسے نظر انداز کیا جاسکتا ہے؟؟.اسی لیے پاکستان اور افواج پاکستان کے خلاف جاری بہت بڑی پراپگینڈا مہم میں بطور خاص پاک فوج کے جرنیلوں اور سپاہ سالاروں نشانہ بنایا جاتا ہے۔تاکہ عام سپاہی میں بے یقینی
Read 5 tweets

Did Thread Reader help you today?

Support us! We are indie developers!


This site is made by just two indie developers on a laptop doing marketing, support and development! Read more about the story.

Become a Premium Member ($3/month or $30/year) and get exclusive features!

Become Premium

Too expensive? Make a small donation by buying us coffee ($5) or help with server cost ($10)

Donate via Paypal Become our Patreon

Thank you for your support!

Follow Us on Twitter!