زندگی ۔۔۔۔ جی لے زرا ۔۔۔ 🌷

زندگی کے موڑ پہ طرح طرح کے لوگوں سے سامنا ہوتا رہتا ہے. ان میں کچھ دلچسپ اور نایاب لوگ ہوتے ہیں. جو زندگی کو کسی مقصد کے لئے گزارتے ہیں.
خورشید خوشحالی صاحب ان میں ایک ہیں جو پچھلے تیس سالوں سے روڈ سیفٹی کے لئے کام کر رہے ہیں اور کہتے ہیں⏬
کہ زندگی بچانا مقصد حیات ہے. بچوں کو سڑک حادثات سے بچانا ان کا مشن ہے اور اس مشن کے لئے اس نے صحافت چھوڑ کر ایک تنظیم بنائی ہے جس کا نام Transport and Road Safety Foundation ہے.
اس کا ماننا ہے کہ اگر ہم اپنی رویوں میں مثبت تبدیلی لائیں تو زندگی بڑی خوشحالی سے جی لیں گے⏬
. ٹریفک کے اصولوں کی پابندی پر بہت زور دیتے ہیں اور کہتے ہیں آج کل ٹریفک کے حادثات ایک بڑا المیہ ہے. بچوں کی زندگی کے حوالے سے وہ خاصی حساس اور سنجیدہ ہے یہی وجہ ہے کہ وہ لاہور سے سکول سیفٹی پروگرام کے لئے داسو تشریف لائے.
اس معاشرے میں ان جیسے بہت سے لوگ ہیں⏬
جنہوں نے زندگی دوسروں کے لئے وقف کی ہیں اور وہ مختلف شعبوں میں خدمت خلق کے لئے کوشاں ہیں.
آپ کا پروفائل دیکھا تو کوہستان داسو پہنچ کر جو تصویر شئیر کی تھی اس پہ لکھا تھا:⏬
"زندگی ۔۔۔۔ جی لے زرا ۔۔۔ 🌷
یہ پہاڑوں کی محبت ہے ۔۔۔ کہ بلاتے ہیں ۔۔ ورنہ کون پلٹ کر بلاتا ہے ۔۔۔ 😊"
اللہ تعالٰی ہمیں حقیقی معنوں میں خدمت خلق کی توفیق دے

• • •

Missing some Tweet in this thread? You can try to force a refresh
 

Keep Current with ᗩᕊᖙᘎᒪɱαƭεεɳ💧

ᗩᕊᖙᘎᒪɱαƭεεɳ💧 Profile picture

Stay in touch and get notified when new unrolls are available from this author!

Read all threads

This Thread may be Removed Anytime!

PDF

Twitter may remove this content at anytime! Save it as PDF for later use!

Try unrolling a thread yourself!

how to unroll video
  1. Follow @ThreadReaderApp to mention us!

  2. From a Twitter thread mention us with a keyword "unroll"
@threadreaderapp unroll

Practice here first or read more on our help page!

More from @PrinceMateenk

21 Nov
امریکہ میں ڈکیتی کے دوران ، بینک لٹیرے نے بینک میں موجود ہر ایک کو آواز دی: "حرکت نہ کرو۔ پیسہ ریاست کا ہے۔ آپ کی زندگی آپ کی ہے۔"

بینک میں موجود ہر شخص خاموشی سے لیٹ گیا۔ روایتی طرز فکر کو بدلنا اسے "مائنڈ چینجنگ تصور"کہتے ہیں۔

جب ایک خاتون اشتعال انگیز طور پر میز پر لیٹی⏬ Image
تو ڈاکو اس پر چیخا: "مہذب ہوجائیں! یہ ڈکیتی ہے نا کہ عصمت دری!"

اس کو "پیشہ ورانہ ہونا" کہا جاتا ہے صرف اس بات پر فوکس کریں کہ آپ کو تربیت دی جاتی ہے۔

جب بینک ڈاکو گھر واپس آئے تو ، چھوٹے ڈاکو (MBA سے تربیت یافتہ) نے بڑے ڈاکو (جس نے صرف پرائمری اسکول میں سال 6 مکمل کیا ہے)⏬
سے کہا: "بڑے بھائی ، آئیے گنیں کہ ہمیں کتنا ملا؟"

بوڑھے ڈاکو نے سرزنش کی اور کہا: "آپ بہت بیوقوف ہیں۔ اتنے پیسے ہیں کہ گننے میں ہمیں بہت وقت لگے گا۔ آج رات ٹی وی کی خبر ہی بتائے گی کہ ہم نے بینک سےکتنا لوٹا!"

اسے"تجربہ"کہا جاتا ہے۔ آج کل،تجربہ کاغذی قابلیت سے زیادہ اہم ہے!⏬
Read 7 tweets
19 Nov
ناڑا ۔۔۔
ہاں ناڑا ۔۔
صحیح پڑھا آپ نے ۔۔
یہاں ناڑے کا ہی ذکر ہورہا ہے ۔۔
وہی مردوں کا ناڑا ۔۔
جو آج کل اتنا ڈھیلا ہوگیا ہے کہ بار بار کھل جاتا ہے ۔۔
کبھی مارکیٹ میں عورت کو دیکھ کر ۔ کبھی اسکول مدرسے میں بچوں کو دیکھ کر ۔۔آفس میں ساتھی خواتین کے لیے ۔۔ اور کچھ نہیں تو اپنی محبت⏬
کی خاطر سب کچھ قربان کر دینے والی بھولی بھالی لڑکیوں پر ...
گئے وقتوں میں خاندانی روایات ۔۔ معاشرہ اور دینی تعلیمات ۔۔ انسان کو اپنی نرم گرم گرفت میں رکھ کر عزت و حرمت کی پاسداری کرتے تھے ۔۔ پردہ آنکھ کا بھی مضبوط تھا اور جسم کا بھی قائم تھا ۔۔
ہمارے محلے کے ایک بزرگ تھے ۔کہتے⏬
تھے بیٹا حالات کیسے بھی ہوں ۔۔ مرد کا ضبط برقرار رہنا چاہیے ۔۔ ایسے کہہ لو کے مرد کا ناڑا مضبوط رہے ۔۔
اب تو ایسا لگتا ہے کہ جیسے مویشی خانے کا دروازہ کسی نے ایک دم کھول دیا ہو ۔۔
نہ عورت کا پردہ رہا نہ مرد کا ضبط ۔۔
دونو ں ہی ریس میں ہیں ۔۔عورت فیشن میں ایسی آگے جارہی ہے⏬
Read 10 tweets
19 Nov
ﺳﻮﺭﮦ ﮐﮩﻒ کا ﺍﯾﮏ ﻟﻔﻆ ﮨﮯ
" ﻭﻟﯿﺘﻠﻄﻒ " . ﯾﮧ ﺗﻬﻮﮌﺍ ﺑﮍﺍ ﮐﺮ ﮐﮯ ﻟﮑﮭﺎ ﮨﻮﺍ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ
ﮐﯿﻮﻧﮑﮧ ﯾﮩﺎﮞ ﻗﺮﺁﻥ ﭘﺎﮎ ﮐﺎ ﺩﺭﻣﯿﺎﻥ ﺁﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ .ﯾﮧ ﻟﻔﻆ ﭘﻮﺭﮮ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﺎﺧﻼﺻﮧ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﺎ ﺗﺮﺟﻤﮧ ﮨﮯ : ⏬ Image
ﺍﻭﺭ ﻧﺮﻣﯽ ﺳﮯ ﺑﺎﺕﮐﺮﻧﺎ .
ﺟﺐ ﺍﻟﻠﮧ ﻧﮯ ﻣﻮﺳﯽٰ ﻋﻠﯿﮧ ﺍﻟﺴﻼﻡ ﮐﻮ ﻓﺮﻋﻮﻥ ﮐﮯ ﭘﺎﺱ
ﺑﻬﯿﺠﺎ ﺗﻮ ﺑﻬﯽ ﯾﮩﯽ ﮐﮩﺎ ﮐﮧ ﺗﻢ ﺍﺱ ﺳﮯ ﻧﺮﻣﯽ ﺳﮯ ﺑﺎﺕ
ﮐﺮﻧﺎ ﺷﺎﯾﺪ ﻭﮦ ﻣﺎﻥ ﺟﺎﺋﮯ . ﮐﻮﻥ ﻣﺎﻥ ﺟﺎﺋﮯ؟ ﻭﮦ ﺍﻧﺴﺎﻥ⏬
ﺟﺲ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻣﺘﮑﺒﺮ ﺍﻭﺭ ﮔﮭﻤﻨﮉ ﻭﺍﻻ ﺷﺨﺺ ﺩﻧﯿﺎ ﻣﯿﮟ
ﺍﻭﺭ ﮐﻮﺋﯽ ﺁﯾﺎ ﻧﮩﯿﮟ .
ﺯﻧﺪﮔﯽ ﮐﺘﻨﯽ ﺑﺪﻝ ﺟﺎﺋﮯ ﺍﮔﺮ ﮨﻢ ﺍﺱ ﺑﺎﺕ ﮐﻮ ﻣﺎﻥ ﺟﺎﺋﯿﮟ
ﮐﮧ ﻧﺮﻣﯽ ﺳﮯ ﺑﺎﺕ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﺎ ﻣﻄﻠﺐ ﺑﮯ⏬
Read 4 tweets
18 Nov
*اُردُو زُبان کا خون کیسے ہوا ؟*
*اور ذمہ دار کون ہے؟*

یہ ہماری پیدائش سے کچھ ہی پہلے کی بات ہے جب مدرسہ کو اسکول بنا دیا گیا تھا۔ ۔ ۔ ۔۔
لیکن ابھی تک انگریزی زبان کی اصطلاحات دورانِ تعلیم استعمال نہیں ہوتی تھیں۔ صرف انگریزی کے چند الفاظ ہی مستعمل تھے،
مثلا": Image
ہیڈ ماسٹر،
فِیس،
فیل،
پاس وغیرہ
"گنتی" ابھی "کونٹنگ" میں تبدیل نہیں ہوئی تھی۔ اور "پہاڑے" ابھی "ٹیبل" نہیں کہلائے تھے۔
60 کی دھائی میں چھوٹے بچوں کو نام نہاد پڑھے لکھے گھروں میں"خدا حافظ" کی جگہ"ٹاٹا"سکھایاجاتا اور مہمانوں کے سامنے بڑے فخر سے معصوم بچوں سے"ٹاٹا"کہلوایاجاتا⏬
زمانہ آگے بڑھا، مزاج تبدیل ہونے لگے۔
عیسائی مشنری سکولوں کی دیکھا دیکھی کچھ نجی (پرائیوٹ) سکولوں نے انگلش میڈیم کی پیوند کاری شروع کی۔
سالانہ امتحانات کے موقع پر کچھ نجی (پرائیویٹ) سکولوں میں پیپر جبکہ سرکاری سکول میں پرچے ہوا کرتے تھے۔ پھر کہیں کہیں استاد کو سر کہا جانے لگا⏬
Read 22 tweets
18 Nov
سونے کا طریقہ میاں بیوی کے تعلقات کا آئینہ دار،جدید تحقیق میں دلچسپ انکشافات

برمنگھم (نیوز ڈیسک) ماہرین نفسیات نے ایک حالیہ تحقیق میں معلوم کیا ہے کہ شادی شدہ جوڑوں کے سونے کا انداز ان کی شخصیت اور آپس میں تعلق کے بارے میں بہت کچھ کہتا ہے۔⏬ Image
نفسیات دان کورن سیوٹ نے ملٹی نیشنل Dreams کیلئے ایک تحقیق کی ہے جس میں معلوم ہوا ہے کہ جوڑے عام طور پر کوئی درجن بھر مختلف انداز میں سوتے ہیں۔ ان میں سے اہم ترین انداز اور ان سے متعلقہ اہم انکشافات درج ذیل ہیں:⏬
٭ لیرٹی (27فیصد)
ایک دوسرے سےکچھ فاصلے پر ایک دوسرےکی طرف پشت کرکےسونے کا انداز لیرٹی کہلاتا ہےاور تقریباً 27فیصد جوڑےاس انداز میں سوتےہیں اس انداز میں سونےوالے ایک دوسرے سےگہرے تعلق کےباوجود آزاد شخصیات کےحامل ہوتے ہیں اور اپنےتعلق کےبارے میں پراعتماد ہوتےہیں،یہ زیادہ پایاجاتا⏬
Read 8 tweets
10 Nov
امریکہ کےایک ہسپتال میں ایک عجیب وغریب واقعہ پیش آیا
اور اس واقعےکےزیر اثر امریکن ڈاکٹر مسلمان ہوگیا
مذکورہ ہسپتال میں ایک روز ڈلیوری کے دو کیس ایک ساتھ آئےایک عورت سے لڑکاپیدا ہوا اور دوسری سےلڑکی
جس رات میں ان دونوں بچوں کی ولادت ہوئی اتفاق سےنگران ڈاکٹرموقع پرموجود نہیں تھا⏬
۔ دونوں بچوں کی کلائی میں وہ پٹی بھی نہیں باندھی ہوئی تھی جس پر بچے کی ماں کا نام درج ہوتا ہے۔

تو نتیجہ یہ ہوا کہ دونوں بچے خلط ملط ہو گئے اور ڈاکٹروں کیلئے یہ شناخت کرنا مشکل ہو گیا کہ کس عورت کا کون سا بچہ ہے حالانکہ ان میں سے ایک لڑکی تھی اور دوسرا لڑکا…
ڈاکٹرو کی ٹیم میں ایک مسلمان مصری ڈاکٹر تھا جس کو اپنے فن میں بڑی مہارت حاصل تھی اور امریکن ڈاکٹروں سے اس کی بڑی اچھی شناسائی تھی اور اپنے سٹاف کے ایک امریکی ڈاکٹر سے گہری دوستی تھی۔

دونوں ڈاکٹرز سخت پریشان تھے کہ اس مشکل کا حل کیسے نکالا جائے؟؟

امریکی غیرمسلم ڈاکٹر نے⏬
Read 11 tweets

Did Thread Reader help you today?

Support us! We are indie developers!


This site is made by just two indie developers on a laptop doing marketing, support and development! Read more about the story.

Become a Premium Member ($3/month or $30/year) and get exclusive features!

Become Premium

Too expensive? Make a small donation by buying us coffee ($5) or help with server cost ($10)

Donate via Paypal Become our Patreon

Thank you for your support!

Follow Us on Twitter!