پرسوں نوشہرہ میں ضمنی الیکشن تھا جس میں ن لیگ کے امیدوار اور PDM کے حمایت یافتہ امیدوار اختیار ولی بھاری اکثریت سے جیت گیا کچھ لوگوں نے کہا مہنگائی کیوجہ سے ہار گئے کچھ نے کہا غلط پالیسوں کیوجہ سے لیکن حقیقت کیا ہے وہ ہم آپکو بتاتے ہے یہ حلقہ سابق صوبائی وزیر میاں جمشید
1/2
ناگہانی وفات سے خالی ہوگیا تھا۔
جس کے بعد یہاں الیکشن کا ماحول بن گیا اب نوشہرہ تحریک انصاف پر قابض خٹک خاندان اس سیٹ کو دوبارہ حاصل کرنے کےلیے میدان میں کھود پڑتی ہے۔
پرویز خٹک اپنے فرزند اسحاق خٹک کو اس سیٹ پر الیکشن لڑوانا چاہتا تھا
1/3
اور اسکا بھائی صوبائی وزیر آبپاشی لیاقت خٹک اپنے بیٹے احد خٹک کو آگے لانا چاہتا تھا۔
جس پر آپس میں اختلاف ہوگیا حالانکہ نوشہرہ میں 2 قومی اور 5 صوبائی حلقوں پر انکے گھر کے لوگ ہے پرویزخٹک MNA اسکا بھانجا اور داماد عمران خٹک بھی MNA پرویز خٹک کا بیٹا ابراہیم خٹک MPA گھر کے
1/4
خواتین کچھ MNA اور کچھ MPA ہے بھائی لیاقت خٹک پہلے ضلع ناظم نوشہرہ تھا اسکا بیٹا احد خٹک تحصیل ناظم تھا یہ خاندان وہاں تحریک انصاف کے کسی بھی نظریاتی کارکن کو آگے آنے نہیں دیتا
اب شکست کی بات کرتے ہے جب ٹکٹ حاصل کرنے کی جنگ شروع ہوئی تو پرویز خٹک کو کچھ سابق یونین کونسل
1/5
کونسل کی مخالفت کا اندازہ ہوگیا تو اس نے اپنے بیٹے کے بجائے میاں جمشید کے بیٹے میاں عمر کو ٹکٹ دینے کا فیصلہ کیا تو بھائی لیاقت خٹک نے کھل کر مخالفت کی اور ن لیگ کے امیداور اختیارولی کو سپورٹ کرنا شروع کیا دوسری طرف ANP کے امیدوار میاں وجاہت کو بھی لیاقت خٹک نے ووٹ خراب۔
1/6
کیلیے میدان میں اتار دیا دونوں بھائیوں کی ذاتی اختلافات نے ورکــرز کو 2 گرپوں میں تقسیم کیا جو ورکــرز پرویزخٹک کیوجہ سے دیوار کیساتھ لگ گئے تھے وہ مجبوراًلیاقت خٹک کے گروپ میں چلے گئے
کیونکہ پرویزخٹک PTI کےنظریاتی ورکرز کو اپنے قریب بھی آنے نہیں دیتااسکے اپنے کچھ خاص لوگ ہے
1/7
جن پر وہ مہربان ہے وہ جس پارٹی میں بھی رہا یہ ٹولہ اسکےساتھ رہتا ہے 2013 اور 2018 کےالیکشن میں تحریک انصاف کےورکرز نے پرویزخٹک کو عمران خان کی محبتــ کیوجہ سےسپورٹ کیا نظرئے کی خاطر لیکن اس نے ورکرز کی محبت سے ناجائز فائیدہ اٹھایا اور اپنے پورے خاندان کو اسمبلیوں تک پہنچا دیا
1/8
اسکا نتیجہ ہم نے دیکھ لیا کہ نظریہ ہارگیا اور ذاتی اختلافات جیت گیا کیا عمران نے 22 سال جدوجہد اس لیے کیا تھا کہ پرویزخٹکــ اور لیاقت خٹکــ کے بچے MPA اورMNA بنے کیا نوشہرہ میں انکے بچوں کے علاوہ اور کوئی قابل بندہ نہیں جو نوشہرہ کی نمائندگی کرسکیں اسکے علاوہ اس سینٹ میں بھی
1/9
تحریک انصاف کے نظریاتی لوگوں کو بدنام کرکے پارٹی سے نکال دیا اسکی مہربانیوں سے پیپلز پارٹی کے 2 سینیٹرز منتخب ہوگئے اور تحریک انصاف کے اپنے امیدوار ہارگئے 2018 کے الیکشن میں بھی اس نے نظریاتی لوگوں کو ٹکٹس نہیں دئے اور اپنے من پسند لوگوں کو دوسری پارٹیوں سے تحریک انصاف میں
1/10
شامل کرکے انکو ٹکٹس دئے وہ لوگ آجکل اسمبلیوں میں موجود ہے اور نظریاتی لوگ اپنے جائز کاموں کےلیے انکی منتیں کرتے ہے جو انتہائی افسوس ناک ہے اب ورکــرز نے فیصلہ کرنا ہوگا کہ وہ عمران خان کی 22 سالہ جدوجہد کا ساتھ دیتے ہے یا پرویزخٹک کے ذاتی مفادات کو ترجیح دیتے ہے
1/11..
آج تحریک انصاف کی شکست پر لیاقت خٹک کے بیٹے احدخٹک نے آتشبازی بھی کی ہے اس شکست کو ورکرز کو بہت فائیدہ ہوگیا اس شکست سے ہماری صوبائی حکومت پر کوئی اثر نہیں پڑے گا لیکن پرویزخٹک کے غرور کو شکست ہوگئی.
🙏😢🙏

• • •

Missing some Tweet in this thread? You can try to force a refresh
 

Keep Current with چالاک مرچو

چالاک مرچو Profile picture

Stay in touch and get notified when new unrolls are available from this author!

Read all threads

This Thread may be Removed Anytime!

PDF

Twitter may remove this content at anytime! Save it as PDF for later use!

Try unrolling a thread yourself!

how to unroll video
  1. Follow @ThreadReaderApp to mention us!

  2. From a Twitter thread mention us with a keyword "unroll"
@threadreaderapp unroll

Practice here first or read more on our help page!

Did Thread Reader help you today?

Support us! We are indie developers!


This site is made by just two indie developers on a laptop doing marketing, support and development! Read more about the story.

Become a Premium Member ($3/month or $30/year) and get exclusive features!

Become Premium

Too expensive? Make a small donation by buying us coffee ($5) or help with server cost ($10)

Donate via Paypal Become our Patreon

Thank you for your support!

Follow Us on Twitter!