Discover and read the best of Twitter Threads about #ہٹلر

Most recents (3)

#ایڈولف_ہٹلر کا پاکستانیtv اینکر شاہ زیب خانزادہ کو گلہ

چند دن پہلے جیوtv کےپروگرام
آج شاہ زیب خانزادہ میں
شاہ زیب خانزادہ نےہٹلر اور ڈونلڈ ٹرمپ کی استلاح استعماری طور پر استعمال کی
لیکن سمجھنےوالی عوام سمجھ گئی
انکی نظروں کےسامنےعمران خان کےدورحکومت کی فلم گھومنے لگی
👇1/12
ایڈولف ہٹلر 20 اپريل 1889ء كو آسٹريا كےايک غريب گھرانےميں پيدا ہوا
اسکی تعليم نہايت كم تھی
آسٹريا كے دارالحكومت ويانا كے كالج آف فائن آرٹس ميں محض اس لیے داخلہ نہ مل سكا كہ وہ ان كے مطلوبہ معيار پر نہيں اترتا تھا۔
1913ء ميں ہٹلر جرمنی چلا آيا جہاں پہلی جنگ عظيم ميں جرمنی
👇2/12
کیطرف سے ايک عام سپاہی کی حيثيت سےلڑا اور فوج ميں اس لیےترقی حاصل نہ كر سكا كہ افسران كے نزديك اس ميں قائدانہ صلاحيتوں كی كمی تھی
1919ء ميں ہٹلر جرمنی کی وركرز پارٹی كا ركن بنا جو1920ءميں نيشنل سوشلسٹ جرمن وركرز پارٹی(نازی)كہلائی
1921ء ميں وہ پارٹی كا چيئرمين منتخب ہوا
👇3/12
Read 12 tweets
چند دن پہلے #جیو tv کے پروگرام آج شاہ زیب خانزادہ میں
شاہ زیب خانزادہ نےہٹلر اور ڈونلڈ ٹرمپ کی اصلاح استعماری طور پر استعمال کی
لیکن سمجھنےوالی عوام سمجھ گئیں اور انکی نظروں کےسامنے عمران خان کےدور حکومت کی فلم گھومنےلگی

ایڈولف #ہٹلر 20 اپريل1889ءكو آسٹريا كے ايك غريب
👇1/12
گھرانے ميں پيدا ہوا۔
اسکی تعليم نہايت كم تھی۔
آسٹريا كے دارالحكومت ويانا كے كالج آف فائن آرٹس ميں محض اس لیے داخلہ نہ مل سكا كہ وہ ان كے مطلوبہ معيار پر نہيں اترتا تھا۔
1913ء ميں ہٹلر جرمنی چلا آيا جہاں پہلی جنگ عظيم ميں جرمنی کی طرف سے ايك عام سپاہی کی حيثيت سے لڑا
👇2/12
اور فوج ميں اسلئےترقی حاصل نہ كرسكا كہ افسران كےنزديك اس ميں قائدانہ صلاحيتوں كی كمی تھی
1919ءميں ہٹلر جرمنی کی وركرز پارٹی كا ركن بنا جو 1920ء ميں نيشنل سوشلسٹ جرمن وركرز پارٹی(نازی)كہلائی
1921ءميں وہ پارٹی كا چيئرمين منتخب ہوا
1930ءميں منعقد ہونے والے انتخابات ميں نازی
👇3/12
Read 12 tweets
حکم ہوا تمام مردوں کو ایک جگہ اکٹھا کیا جائے۔ فوجی شہر کے کونے کونے میں پھیل گئے۔ ماؤں کی گود سے دودھ پیتے بچے چھین لیے گئے۔ بسوں پر سوار شہر چھوڑ کرجانے والے مردوں اور لڑکوں کو زبردستی نیچےاتار لیا گیا۔ لاٹھی ہانکتے کھانستے بزرگوں کوبھی نہ چھوڑا گیا۔
@Iftikhar_hyder @farhan4678
سب کے سب مردوں کو اکٹھا کر کے شہر سے باہر ایک میدان کی جانب ہانکا جانے لگا۔

ہزاروں کی تعداد میں لوگ تھے۔ عورتیں چلا رہی تھیں۔ گڑگڑا رہی تھیں۔ اِدھر اعلانات ہو رہے تھے:
"گھبرائیں نہیں کسی کو کچھ نہیں کہا جائے گا. جو شہر سے باہر جانا چاہے گا اسے بحفاظت جانے دیا جائےگا۔"
@BaaniGul
زاروقطار روتی خواتین اقوامِ متحدہ کے اُن فوجیوں کی طرف التجائیہ نظروں سے دیکھ رہی تھیں جن کی جانب سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ شہر محفوظ ہاتھوں میں ہے۔ لیکن وہ سب تماشائی بنے کھڑے تھے۔

شہر سے باہر ایک وسیع و عریض میدان میں ہر طرف انسانوں
@NahdT5 @FarazWahab1 @AFLa_ToooooN @asad92me
Read 21 tweets

Related hashtags

Did Thread Reader help you today?

Support us! We are indie developers!


This site is made by just two indie developers on a laptop doing marketing, support and development! Read more about the story.

Become a Premium Member ($3.00/month or $30.00/year) and get exclusive features!

Become Premium

Too expensive? Make a small donation by buying us coffee ($5) or help with server cost ($10)

Donate via Paypal Become our Patreon

Thank you for your support!